66.29.132.4 United States

11-Oct-2021

دودھ ایک بار پھر مہنگا ہو گیا

by admin

فراز قریشی کارنامہ نیوز کراچی
دودھ ایک بار پھر مہنگا ہو گیا
کراچی میں دودھ کی قیمت میں ایک بار پھر دس روپے کا اضافہ
قمیت 130 روپے فی کلو کر دی گئی۔۔۔۔۔جب کہ کمشنر کراچی نے دودھ کے سرکاری نرخ 94 رکھے ہیں
اس خود ساختہ مہنگائی کا زمہ دار کون
“وفاقی حکومت “سندھ حکومت”
کمشنر کراچی ؟؟
شہر قائد کے متعدد علاقے میں دودھ 130میں فروخت کیا جا رہا ہے
کمشنر کراچی کی جانب سے دودھ 94 روپے فی لیٹر میں فروخت کرنے کا اعلان صرف زبانی کلامی ہی ثابت ہو رہا ہے عملی طور پر اس پر عمل درآمد نہیں کروایا جا رہا کمشنر کراچی اور انکی ٹیم اس پر عمل کرانے میں مکمل طور پر ناکام دیکھائی دیتی ہے
کمشنر کراچی کے ماتحت پرائس / قیمت کنٹرول کمیٹیاں کہاں ہیں اور وہ کیا کام کر رہی ہیں ؟؟
شہر کی کسی بھی دکان پر کمشنر کراچی آفس سے جاری ہونے والی پرائس لسٹ آویزاں کیوں نہیں کی جاتیں؟؟
کیا عوام کے ٹیکس سے تنخواہیں لینے والے دکانوں سے بھتہ بھی لینے لگے ؟؟
کمشنر کراچی کی جانب سے جاری پرائس لسٹ کی قمیت 2 روپے ہوتی ہے
جو دکانوں پر 10 روپے میں کیوں دی جاتی ہے ؟ایک دکاندار سے معلوم ہوا کہ 2 والی لسٹ 10 میں یہ کہہ کر دی جاتی ہے کہ آپ یہ لسٹ دکان پر آویزاں نہ کریں بس 2 روپے والی لسٹ کے 10 روپے دیں۔۔یوں دکاندار سرکاری نرخ والی پرائس لسٹ دکان پر نہیں لگاتا اور اشیا سرکاری نرخ کے بجائے اپنے من مانے داموں میں فروخت کرتا ہے ہر اشیا پر زیادہ قیمت وصول کرتا ہے
تو اب عوام ہی بتائے اس خود ساختہ مہنگائی سے کس طرح بچا جائے ؟

Related Posts

Leave a Comment

Translate »